براؤزنگ بلاگز

بلاگز

پاکستانی کامیڈی کی دنیا میں اداسی، عمر شریف چل بسے

پاکستانی اسٹیج کے بے تاج بادشاہ کامیڈی کنگ عمر شریف انتقال کرگئے۔ ان کی طبعیت گزشتہ کئی ماہ سے شدید علیل تھے۔ وہ گزشتہ کچھ ہفتوں سے پاکستان میں زیر علاج تھے اور انہیں ڈاکٹروں نے علاج کے لیے بیرونِ ملک منتقلی کا مشوری دیا تھا۔ ان کی طبیعت

ترجمے کا عالمی دن

زاہد حسین دنیا بھر کی معلومات کو ایک خطے سے دوسرے خطے تک پہنچانے اور اس کے عالمی ابلاغ میں جو سب سے بڑی مشکل پیش آتی ہے، وہ زبان کی ہے۔ اس مشکل کو جس چیز نے آسان کیا ہے، وہ ہے ترجمہ۔ اگر ترجمہ نہ ہوتا تو علم کے خزانے، سائنسی کتابیں اور

بھوک

عارف خٹک پردیس میں ہم پردیسیوں کے پاس خود کو دھوکہ دینے کیلئے خاصے مواقع میسر ہوتے ہیں۔ نہ لوڈشیڈنگ کی ٹینشن، نہ مہنگائی کا رونا، نہ امن و آمان کی شکایات اور نہ ہی سیاسی نظریات کہ پل پل خود کو جلاتے پھریں۔ یہاں جب کبھی میرا دل

برِصغیر میں شیعہ سنی تعلقات

اوریا مقبول جان پوری امتِ مسلمہ میں کون ہے جو سیدنا امام حسین رضی اللہ عنہ کی ذات کو پوری امت کا مشترکہ اثاثہ نہ سمجھتا ہو۔ اقبال نے تو انہیں ’قافلہ سالارِِ عشق‘ اور ’نکتۂ پرکارِ عشق‘ جیسے القابات سے یاد کیا۔ اقبال تو اس امت کی زبوں حالی پر

خود کشی (قسط نمبر 3)

ابرام گرگ ہوا میں قدرے خنکی گلی ہوئی تھی۔ ہر طرف سناٹے کا راج تھا۔ دور گاہے بگاہے آورہ کتے وقفے وقفے سے بھونک کر اس خاموشی کی سلطنت میں رخنے ڈالتے رہے تھے۔ صبح کی بھینی بھینی کٹے ہوئے فصلوں کی بو سے لدے ہوئے جھونکے کسی نئی صبح کی نوید سنا

لیڈر شپ کا عملی نمونہ سیرتِ طیبہ کے آئینے میں

بشارت حمید انسان کی پیدائش سے لے کر آج تک ہر دور میں ہی انسانیت میں سے اللہ پاک کچھ لوگوں کو مخصوص صلاحیتوں سے نوازتا ہے، جو قوم کے رہنما یا لیڈر کہلاتے ہیں اور جو قوموں کی رہنمائی کرتے ہیں۔ گو اللہ پاک نے جتنے انبیائے کرام علیہم السلام اس

چپلی کباب ان شارجہ

عارف خٹک مارا خیال تھا کہ مڈل ایسٹ میں آپ کو ہر قسم کے کھانے بآسانی دستیاب ہوں گے، مگر جن ذائقوں کے عادی ہم پاکستان میں ہیں، وہ یہاں ناپید ہیں۔ جو چٹورا پن اور زبان کی حساسیت ہمیں پاکستان میں ملتی ہے وہ یہاں ممکن ہی نہیں۔ شاید یہ ہماری اپنی

افغان حکمران اور اقوام متحدہ کی نمائندگی

شہریار شوکت امریکا کے افغانستان سے چلے جانے کے بعد خطے کی صورتحال خاصی بدل سی گئی ہے۔ انڈیا جیسے ملک نے، جس نے امریکی دور میں افغانیوں اور افغانستان کی زمین کو پاکستان کیخلاف استعمال کیا، اب خاصا پریشان ہے۔ بھارت یہ سمجھتا ہے کہ

سیرینا ہوٹل پانچ منزلہ ہی نہیں، مودی بھی کبھی سر سید احمد خان تھے

بھارتی میڈیا اور اینکرز ہمیشہ سے ہی تنقید کی زد میں رہتے ہیں۔ بھارتی میڈیا اور اینکرز کا بھوندا انداز اور جھوٹی خبر کو سچ بنا کر پیش کرنے کا مضحکہ خیز طریقہ ان کی اپنی عوام کو ہی نہیں بھاتا۔ کمال ہے ان کی ڈھٹائی پر، یہ جانتے بھی ہیں کہ ہم

آپ کو بچے چاہئیں یا روبوٹ؟

ابرام گرگ بچہ جب زور سے ہنستا ہے شور مچاتا ہے قہقہے لگاتا ہے خوش ہوکر ہر لمحے والدین کے سامنے ایک اور سوال کر بیٹھتا ہے، تب ہم بچے کے معاملے میں زیادہ سے زیادہ سنجیدگی اپنانے لگتے ہیں۔ ہم ہمیشہ یہ بات بچے کی دماغ میں ٹھونسنے کی کوشش کرتے